خاتون کو شیشہ توڑ کر گاڑی سے نیچے اتارا اور زیادتی کا نشانہ بنایا، ملزم عابد ملہی

52

لاہور میں موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد ملہی نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے متاثرہ خاتون کو گاڑی کا شیشہ توڑ کر نیچے اتارا اور پھر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

نجی چینل ‘جیو نیوز’ سے گفتگو کرتے ہوئے عابد ملہی نے کہا کہ واردات میں ملزم شفقت اس کے ساتھ تھا، موٹروے پر ایک گاڑی نظر آئی جسے دیکھ کر دونوں اس کے پاس چلے گئے۔

ملزم نے کہا کہ گاڑی کا شیشہ توڑا اور خاتون کو نیچے اتارا، پہلے ان سے 20 ہزار روپے لوٹے اور پھر انہیں زیادتی کا نشانہ بنایا۔

عابد کا کہنا تھا واردات کے بعد وہ شیخوپورہ میں اپنے آبائی گھر جبکہ شفقت کہیں اور چلا گیا۔تحریر جاری ہے‎

مرکزی ملزم نے بتایا کہ وہ قصور، شیخوپورہ اور ننکانہ میں چھاپے سے قبل ہی پولیس کو دیکھ کرفرار ہوگیا تھا۔

اس کا کہنا تھا کہ متاثرہ خاتون نے اسے شناخت بھی کرلیا ہے۔

دوسری جانب لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے کیس کی سماعت کی۔

پولیس نے عابد کا 15 روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر اسے سخت سیکیورٹی میں پیش کیا۔

پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم کا پولی گرافک ٹیسٹ اور دوبارہ ڈی این اے کیا گیا، اس کا بیان بھی ریکارڈ کر لیا گیا ہے اور مزید تفتیش کی ضرورت نہیں۔

عدالت نے مرکزی ملزم کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا اور دوبارہ یکم دسمبر کو پیش کرنے کا حکم دیا۔

خیال رہے کہ 9 ستمبر کو منگل اور بدھ کی درمیانی شب لاہور-سیالکوٹ موٹروے پر گجرپورہ کے علاقے میں 2 مسلح افراد نے ایک خاتون کو اس وقت گینگ ریپ کا نشانہ بنایا تھا جب وہ وہاں گاڑی بند ہونے پر اپنے بچوں کے ہمراہ مدد کی منتظر تھی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.