تین سال تک تروتازہ رہنے والا گلاب، لیکن قیمت 30 ہزار

دبئی سٹی:دبئی میں کھلنے والی ایک کمپنی نے غیرمعمولی خوبصورت اور کئی سال تک تازہ رہنے والے گلاب تیار کئے ہیں جن سے بنے بعض گلدستوں اور شاہکار کی قیمت 80 ہزار ڈالر تک ہے۔

سب سے پہلے ان پھولوں کی کاشت لندن میں واقع فور ایور روز نامی کمپنی نے کی تھی اور اب کمپنی نے ایک شاخ دبئی میں کھولی ہے۔ دبئی برانچ کے مالک ابراہیم الصمدی نے بتایا کہ یہ گلاب ایکواڈر کے آتش فشاں کے قریب کاشت کیا جاتا ہے۔ آتش فشانی راکھ میں پروان چڑھنے والے پھول فطری طور پر تادیر اپنی تازگی برقرار رکھتے ہیں۔ اسی بنا پر فورایور روز کا دعویٰ ہے کہ ان کے پھول تین سال تک خوشما اور تازہ رہتے ہیں۔

لیکن اس کے بعد پھولوں پر خاص گلیسرین لگائی جاتی ہے اور انہیں ایک قسم کے عمل سے گزار کر شیشے کے مرتبان سے ڈھانپا جاتا ہے۔ اگرچہ گلیسرین سے گزارے گئے پھول کئی دوسرے ادارے بھی فروخت کررہے ہیں لیکن فور ایور ینگ کا دیرپا گلاب پوری دنیا میں سب سے مہنگا ہے

مالدارافراد اور ادارے ہی یہاں سے پھول خریدتے ہیں اور ڈسپلے کے گلدستے اور شاہکار ڈیزائن کرواتے ہیں۔ یہاں تک کہ پھولوں سے تیارکردہ ایک سینگ والا گھوڑا بنایا گیا تھا جس کی قیمت 80 ہزار ڈالر یعنی ایک کروڑ روپے سے بھی زائد ہے۔

فورایور روز کی ویب سائٹ سے آپ ایک پھول 100 سے 200 ڈالر میں خرید سکتے ہیں۔ لیکن ایک یا دو پھولوں والے گلدستوں کو 300 سے 500 ڈالر میں بھی فروخت کیا جارہا ہے۔ اس کےعلاوہ بڑے گلدستے ہزاروں ڈالر میں فروخت کئے جارہے ہیں۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے