جب ٹوائلٹ میں چھپے سانپ نے ایک شخص کو ڈس لیا

اس وقت آپ کا کیا حال ہوگا جب آپ واش روم کا رخ کریں اور ٹوائلٹ سیٹ میں ایک بن بلایا مہمان آپ کو ‘خوش آمدید’ کہنے کے لیے بیٹھا ہو اور اس کے ڈسنے تک کا علم بھی نہ ہو؟

ایسا ہی کچھ یورپی ملک آسٹریا میں ایک شخص کے ساتھ ہوا۔

آسٹریا کے شہر گراز سے تعلق رکھنے والے 65 سالہ شخص کو اپنی زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا اس پائیتھون سانپ کے حملے سے لگا۔

مقامی پولیس کے مطابق صبح 6 بجے وہ شخص ٹوائلٹ گیا تو اسے علم نہیں تھا کہ ٹوائلٹ سیٹ کے اندر ایک 5 فٹ لمبا سانپ موجود ہے۔

پولیس نے بتایا ‘جیسے ہی وہ شخص بیٹھا تو اسے ایسا لگا جیسے کسی نے گوشت کو ناخنوں سے دبوچ لیا ہے’۔

یہ پائیتھون سانپ متاثرہ فرد کے ایک پڑوسی کا تھا جسے علم نہیں ہوسکا کہ وہ کب فرار ہوگیا اور ڈرین پائپس کے ذریعے ٹوائلٹ تک پہنچ گیا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ ایک ماہر سے رابطہ کرکے بلایا گیا اور اس نے سانپ کو ٹوائلٹ سے نکال کر صاف کیا اور اس کے مالک کو واپس کیا۔

متاثرہ فرد کو معمولی زخموں کے باعث ہسپتال پہنچایا گیا۔

دوسری جانب سانپ کے 24 سالہ مالک، جس کی ملکیت میں 11 سانپ ہیں جو خوش قسمتی سے زہریلے نہیں ہیں، کو حکام کی جانب سے غفلت کے الزامات کا سامنا ہے۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے