داسو ہائیڈرو پاور پلانٹ کے قریب بس حادثہ، چینی انجینئرز سمیت 8 افراد ہلاک

خیبر پختونخوا کے بالائی ضلع کوہستان میں داسو ہائیڈرو پاور پلانٹ میں ورکرز کو لے جانے والی بس حادثے کا شکار ہوگئی جس کے نتیجے میں چینی انجینئرز سمیت 8 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

اپر کوہستان کے ڈپٹی کمشنر عارف خان یوسف زئی نے ڈان ڈاٹ کام کو بتایا کہ یہ واقعہ صبح 7 بجے کے قریب اس وقت پیش آیا جب ایک بس برسین کیمپ سے 30 ورکرز کو لے کر پلانٹ کے مقام پر جارہی تھی۔

انہوں نے بتایا کہ جب یہ واقعہ پیش آیا اس وقت غیر ملکی انجینئرز، فرنٹیئر کورپس کے اہلکار اور مقامی مزدور بس میں سوار تھے۔

عارف خان یوسف زئی نے بتایا کہ حادثے کی وجہ کا تاحال پتہ نہیں چل سکا ہے اور امدادی کارروائی جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس اور رینجرز نے اس علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔

سینیئر پولیس افسر نے ڈان ڈاٹ کام سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ زخمیوں کو اپر کوہستان ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

ایک سینئر پولیس افسر نے ڈان ڈاٹ کام کو بتایا کہ یہ واضح نہیں ہے کہ اس واقعے کی وجہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس علاقے میں موبائل نیٹ ورک کام نہیں کررہے ہیں جس کی وجہ سے معلومات حاصل کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔

عہدیدار نے بتایا کہ ’اس وقت ہمیں واضح نہیں کہ یہ دھماکا ہے یا کوئی حادثہ تاہم یہ کسی دھماکے کی طرح لگتا ہے‘

انہوں نے کہا کہ پولیس کی جانب سے ابتدائی تفتیش مکمل ہونے کے بعد صورتحال واضح ہوجائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ کے پی پولیس چیف معظم انصاری ایک ہیلی کاپٹر پر اپر کوہستان روانہ ہوگئے ہیں۔

ادھر واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (واپڈا) نے بھی واقعے کی نوعیت کو واضح نہیں کیا۔

واپڈا کی جانب سے جاری بیان میں اس واقعے کو ایک ’حادثہ‘ قرار دیا گیا ہے۔

واپڈا کے ترجمان نے تصدیق کی ہے کہ چینی کمپنی کے ملازمین بس میں سفر کر رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ واقعے کی جگہ پر امدادی سرگرمیاں جاری ہیں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا کہ واپڈا کی چیئرپرسن ریسکیو کے کام کی نگرانی کے لیے داسو کے لئے روانہ ہوئی ہے۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے