عمران خان کی جدو جہد کا اختتام اسٹیبلشمنٹ کےدھبے کے ساتھ ہوا، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ ’عمران خان کی 22 سالہ جدوجہد کا اختتام ان کے ماتھے پر اسٹیبلشمنٹ کا گھوڑا ہونے کا دھبہ لگوانے کے ساتھ ہوا۔

آزاد کشمیر کے علاقے ہجیرہ میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 22 سال کی جدوجہد کے بدلے بدنامی اور رسوائی کے یہ داغ، عمران خان یہ خسارے کا سودا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان کو کہنا چاہتی ہوں کہ تم چاہے انتخابات چوری کرو، چاہے نواز شریف کے امیدوار بھگا کر لے جاؤ، چاہے ڈبوں میں بیٹھ جاؤ یا پورا الیکشن کمیشن اغوا کرلو، کشمیر اپنا فیصلہ سنا چکا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’کشمیر کا فیصلہ ہے نواز شریف، کان کھول کر سن لو یہاں آنے کی تکلف مت کرنا ورنہ یہ کشمیری جس طرح تمہارا استقبال کریں گے تم جانتے ہو‘۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ ’عمران اپنے لوگوں کو جھوٹی تسلی دے رہے تھے کہ میرے علاوہ سلیکٹرز کے پاس اور کوئی آپشن نہیں، شرم کی بات ہے آپ کو یہ اعتراف کرنا پڑ رہا ہے کہ تم عوام کی نہیں سلیکٹرز کی پسند ہو‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان نے خود بتادیا کہ وہ عوام کے ووٹ سے نہیں، الیکشن چوری کرکے آئے ہیں، اس سے نواز شریف اور عمران خان میں فرق واضح ہوا‘۔

انہوں نے کہا کہ ’تم سلیکٹرز کے اشارے پر لٹو کی طرح گھومتے ہو اسی لیے ان کی پسند ہو اور نواز شریف وہ شیر ہے جس پر جب زیادتی ہوئی تو اس نے کہا جو مرضی کرلو نواز شریف جھکنے اور بکنے والا نہیں‘۔

لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ ’7 دہائیوں میں عمران خان کی حکومت میں بھارت کو اتنی جرات ہوئی کہ ایک دستخط سے کشمیر کو پاکستان کی شہہ رگ سے کاٹ دیا، نواز شریف وزیر اعظم ہوتا تو بھارت کو کبھی اتنی جرات نہ ہوتی‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’تم چوائس اس لیے ہو کیونکہ تم ہر بات پر جھک جاتے ہو‘۔

انہوں نے کہا کہ ’نواز شریف کہا کرتے تھے اے طائر لاہوتی اس رزق سے موت اچھی جس رزق سے آتی ہو پرواز میں کوتاہی، اس کرسی سے موت اچھی جس پر عمران خان آج 22 سال کی جدو جہد کے بعد سر اٹھا کر چلنے کے قابل نہیں رہے‘۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ ’لوگ عمران خان کو 22 سال کی جدوجہد سے نہیں اسے کھٹپتلی وزیر اعظم کی حیثیت سے یاد رکھیں گے جو اشاروں پر ناچتا ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’یہ سودا کرکے بھی تم یہ کہنے کے قابل نہیں کہ تمہارے ساتھ زیادتی ہو کیونکہ تمہارے راز ان کے پاس ہے اور ان کے راز تمہارے پاس ہیں، نواز شریف جیسی جرات رکھنا، استقامت رکھنا ہر کسی کے بس کی بات نہیں‘۔

انہوں نے کہا کہ ’جس کے خلاف گزشتہ 7 سے 8 سال سے تم سازش کرنے میں مصروف ہو، وہ نواز شریف مجبوری کے تحت لندن میں ہے لیکن ایک کے بعد ضمنی انتخابات میں اس نے تمہیں دن میں دکھادیے ہیں‘۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر کا کہنا تھا کہ ‘تمہارے ریاستی وسائل استعمال کرنے کے باوجود نواز شریف لندن سے ہی تمہارے گھر میں گھس کر تمہیں مارتا ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’کشمیر کی ہر گلی میں نواز شریف کا نعرہ لگتا ہے، سازشوں سے حاصل کیا گیا اقتدار اقتدار نہیں شرمندگی، بدنامی ہوتی ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’میں آپ کو خبردار کرنے آئی ہوں کہ عمران خان کشمیر میں اپنی حکومت اس لیے لانا چاہتا ہے کیونکہ وہ اسے صوبہ بنانا چاہتا ہے، میں آج یہ اعلان کرتی ہوں کہ بچہ بچہ کٹ مرے گا کشمیر صوبہ نہیں بنے گا‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’یہ سازش یہ کرچکے ہیں بس اس کا نفاذ باقی ہے، تم کون ہوتے ہو مقبوضہ کشمیر کو بھارت کی جھولی میں پھینکنے والے پھر آزاد کشمیر سے اس کی پہچان چھیننے والے‘۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے